روزنامہ صدائے چنار کوٹلی مظفر آباد
Daily Sada-E-Chanar (روزنامہ صدائے چنار)

- Advertisement -

انسداد لانڈرنگ ایکٹ، فاروق عبداللہ سمیت27افراد کیخلاف چارج شیٹ

0 24

سرینگر(کے پی آئی ) مقبوـضہ جموں و کشمیر میں بھارتی تحقیقاتی ادارے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے جموں و کشمیر کرکٹ ایسوسی ایشن میں فنڈز کے غبن سے متعلق کیس میں نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کے خلاف ایک ضمنی چارج شیٹ دائر کردی ہے چارج شیٹ داخل کرنے کے بعد فاروق عبداللہ سمیت تمام ملوث افراد کو 27اگست کو انسداد منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت قائم کی گئی خصوصی عدالت میں پیش ہونے کے لیے نوٹس جاری کیے گئے ہیں۔ضمنی چارج شیٹ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کی ترجمان سارہ حیات شاہ نے صحافیوںکو بتایا کہ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ اور سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن کو بی جے پی کی تمام اپوزیشن جماعتوں کو خاموش کرانے کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے تاکہ اقتدار پر قبضہ جاری رکھنے کی خاطر ان کے لئے میدان کھلا رکھا جا سکے ۔نیشنل کانفرنس نے فاروق عبداللہ کی ممکنہ گرفتاری محسوس کرنے کے بعد ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہاکہ فاروق عبداللہ ہمیشہ سچ پر قائم رہیں گے، چاہے کہانیاں کتنی ہی من گھڑت ہوں، سچائی میں ہیرا پھیری کی گئی ہو اور اختلاف رائے کو دبایا گیا ہو۔انہوں نے کہا تاہم وہ ایجنسیوں کے ساتھ تعاون کریں گے اور اپنے آپ کو درست ثابت کریں گے، فاروق عبداللہ 2001 سے 2012 تک جے کے سی اے کے چیئرمین تھے اور سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) اور ای ڈی کی جانچ 2004 اور 2009 کے درمیان مبینہ مالی بدعنوانی کے بارے میں ہے۔بھارتی تحقیقاتی ادارے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ پہلے ہی 21 کروڑ روپے سے زیادہ کی املاک ضبط کرچکی ہے ۔ اس میں فاروق عبداللہ کی 11.86 کروڑ روپے کی غیر منقولہ جائیداد بھی شامل ہے ۔بھارتی تحقیقاتی ادارے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹنے دعویٰ کیا کہ اس کی اب تک کی جانچ میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ احسان احمد مرزا نے جے کے سی اے کے دیگر عہدیداروں کے ساتھ مل کر 51.90 کروڑ روپے کے جے کے سی اے فنڈز کا غلط استعمال کیا تھا اور اپنے ذاتی اور کاروباری قرضوں کو نمٹانے کے لئے جرم کی رقم کا استعمال کیا تھا۔

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.